Tuesday , June 19 2018
Home / Nawaiwaqt News Urdu / مسلم لیگ نے ملک بحرانوں سے نکال کر ترقی کی راہ پر ڈالا

مسلم لیگ نے ملک بحرانوں سے نکال کر ترقی کی راہ پر ڈالا

کراچی(اسٹاف رپورٹر+ صباح نیوز) پاکستان مسلم لیگ(ن) کے صدر اوروزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف سے گورنر ہاو¿س کراچی میں مسلم لیگ(ق) سندھ کے 30رکنی وفد نے صوبائی جنرل سیکریٹری مطیع الرحمن کی قیادت میں ملاقات کی اور مسلم لیگ(ن) میں شمولیت کااعلان کیا،مسلم لیگ ق کے رہنماو¿ں نے شہبازشریف کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہارکرتے ہوئے کراچی باالخصوص سندھ کے مسائل میں دلچسپی اورانہیں حل کرنے کے لیے عملی اقدامات پروزیراعلی پنجاب کا شکریہ ادا کیا۔مسلم لیگ نون کے صدرمیاں شہبازشریف کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ(ق) کے رہنماو¿ں کی پاکستان مسلم لیگ(ن) میں شمولیت کا خیر مقدم کرتے ہیں،مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے ملک کو بحرانوں سے نکال کر ترقی کی راہ پر ڈالاہے۔ہمارا ہر قدم عوام کی فلاح اورانہیں ریلیف کی فراہمی کیلئے اٹھ رہا ہے، ہم ملکر کراچی سمیت پورے صوبہ سندھ کو بہتر بنائیں گے۔مسلم لیگ ق کے رہنماو¿ں کا کہنا تھا کہ شہبازشریف کا ترقیاتی ویژن بے مثال ہے اورہم اس سے متاثر ہوکراس جدوجھد میں شریک ہورہے ہیں۔ شہبازشریف نے پنجاب کے عوام کی ترقی اورخوشحالی کیلئے انتھک محنت کی ہے۔ مسلم لیگ(ن) میں شامل ہونے والے وفد میں مہدی حسین شاہ صدر ریلوے یونین،عبدالغفور صدرسوئی سدرن یونین،طارق آرائیں صدر پی ٹی سی ایل یونین،مختلف یونین کونسلوں کے صدور،احمد حسین ،آصف قریشی اوردیگر شامل تھے۔علاوہ ازیں شہبازشریف سے گورنر ہاو¿س کراچی میں میڈیا مالکان اورسینئر صحافیوں نے ملاقات کی اورملکی معاشی سیاسی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امورپرتبادلہ خیال کیا۔اس موقع پروزیراعلی پنجاب کا کہنا تھا کہ کراچی کوماضی میں وہ توجہ نہیں دی گئی جواس کا حق تھا اور بجلی بحران کے حوالے سے کے الیکٹرک نے اپنی ذمہ داری ادا نہیں کی۔ انہوں نے کہاکہ کراچی کے شہری بجلی نہ ہونے کی وجہ سے بلبلا رہے ہیں میں نے وزیراعظم کی زیرصدارت اجلاس میں کراچی کے شہریوں کو بجلی کی سپلائی بہتر بنانے کی تائید کی ہے ،کراچی کے عوام کا کوئی قصور نہیں ،کراچی کے عوام کو بلاتعطل بجلی کی فراہمی یقینی بنائی جانی چاہیے۔شہبازشریف نے کہاکہ ہم نے پنجاب میں اپنے وسائل سے بجلی کے پلانٹس لگائے ہیں ان پلانٹس کی بجلی پورے پاکستان کو مل رہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی شہر کی رونقوں کو بحال کرنا ہے اس مقصد کیلئے ہم ہر ایک سے تعاون کیلئے تیار ہیں۔کراچی میں گرین لائن بس منصوبہ مکمل کرکے بسیں چلانی چاہیئے تھیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کا ایجنڈا سب سے مقدم ہے ،ہم نے پاکستان کو پاکستانی بن کر ہی آگے لے کر جانا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہاکہ یہ وقت اختلافات کا نہیں بلکہ اتحاد اوراتفاق کا ہے میری تجویز ہے کہ آئندہ جو بھی وفاقی حکومت ہو وہ کراچی کی ترقی اورخوشحالی کیلئے فنڈز مختص کرے، یہ فنڈز بہترطریقے سے استعمال کیے جائیں تاکہ کراچی صحیح معنوں میں ترقی کرسکے۔شہبازشرےف سے گورنرہاﺅس کراچی میں مسلم لیگ (ن) سندھ کے قائمقام صدر شاہ محمد شاہ کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی – شہبازشریف نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ سندھ کے عوام میں یہ صدا گونج رہی ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) ہی ان کے مسائل کاحل نکال سکتی ہے -گزشتہ روز لیاری او ربلدیہ ٹاﺅن کے جلسو ں میں لوگوں کا بے پناہ جوش دیکھا ہے،ایسا جوش اگر پنجاب میں ہوتو وہ اچھنبے کی بات نہیں لیکن سندھ میں اچھنبے کی بات ضرور ہے -انہوںنے کہاکہ شہر کراچی کے لوگوں میں پاکستان مسلم لیگ (ن) پر اعتماد نظر آتا ہے – کارکن عوام سے رابطہ رکھیں اور ان کی دیوانہ وار خدمت کریں – انہوںنے کہاکہ بہت جلد اندرون سندھ کا دورہ کروں گا اورضلع کی سطح پر عہدےداروں سے ملاقاتیں کروں گا- انہوںنے کہاکہ کراچی میں امن کی بحالی، بھتہ خوری اور قتل وغارت کا خاتمہ نوازشریف کی بصیرت کا ثبوت ہے اور کراچی میں امن کو بحال کرنے میں پاک افواج اور رینجرز کا کردار قابل تحسین ہے – انہوںنے کہاکہ کراچی میں پانی کاکے ۔4منصوبہ ،توانائی ، سڑکوںاور موٹروے نوازشریف کے منصوبے ہیں جن پر تیزی سے کام جاری ہے -شاہ محمد شاہ قائمقام صدر مسلم لیگ (ن) سندھ نے کہا کہ شہبازشریف نے ایک ہفتے میں جس طرح سندھ میں ڈبل انٹری ڈالی ہے مخالف جماعتیں پریشان ہو گئی ہیں- قائمقام صدر پاکستان مسلم لیگ (ن) سندھ شاہ محمد شاہ، قائمقام جنرل سیکرٹری سینیٹر سلیم ضیاء،سینیٹر اسد جونیجو ، شفقت شیرازی،زین انصاری ، علی اکبر گجراور سندھ بھرسے پارٹی کے ضلعی عہدےداران ملاقات میں موجود تھے –

شہباز شریف



Visit To News Source Webpage

Check Also

پی ٹی آئی کے امیدواروں کی لسٹ سے پی ٹی آئی ہی غائب

سابق وزیراطلاعات و نشریات اورمسلم لیگ ن کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہا ہے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *